کاروباروں کے لیے

جاب کیپر ادائیگی

حکومت کی طرف سے جاب کیپر ادائیگی ان کاروباروں کے لیے ایک عارضی سبسڈی تھی جو کرونا وائرس (COVID-19) کی وجہ سے بہت متاثر ہوئے ہیں۔

اہل آجر، سول ٹریڈر اور دوسرے کاروبار اپنے اہل ملازمین کے لیے جاب کیپر ادائیگياں لینے کی درخواست دے سکتے تھے۔ یہ رقم آجر کو ATO  ہر مہینے کے لیے وہ مہینہ گزر جانے کے بعد ادا کرتا تھا۔

کاروبارATO  کے بزنس پورٹل کے ذریعے، سول ٹریڈرز myGov استعمال کرتے ہوئے ATO  آن لائن سروسز میں یا کسی رجسٹرڈ ٹیکس ایجنٹ یا BAS ایجنٹ کے ذریعے جاب کیپر ادائیگیوں کے لیے اندراج کر سکتے تھے۔

جاب کیپر ادائیگی کے بارے میں معلومات کے لیے دیکھیں www.ato.gov.au/JobKeeper

بل اور اجرتیں ادا کر پانے کے لیے رقوم کی آمد (کیش فلو) جاری رکھنے کو یقینی بنانا

جو اہل کاروبار اور بلامنافع کام کرنے والے (نان پرافٹ NFP,) ادارے عملہ رکھتے ہوں، انہیں مارچ 2020 سے ستمبر 2020 تک ہر مہینے اور ہر سہ ماہی کی ایکٹیویٹی سٹیٹمنٹ داخل کرنے پر$20,000  سے $100,000  کے درمیان کیش فلو بوسٹ رقوم ملیں گی۔

یہاں مزید تفصیل دیکھیں:

زیر تربیت کارکن (اپرنٹس اور ٹرینی)

حکومت آسٹریلیا کی ہنرمند افرادی قوت کی مسلسل ترقی کو سہارا دے رہی ہے اور اہل کاروباروں کو اپنے زیر تربیت اپرنٹس اور ٹرینی کارکنوں کو اپنے پاس رکھنے کی خاطر، اجرتوں کے لیے 50 فیصد سبسڈی پیش کر رہی ہے جس کی زیادہ سے زیادہ رقم $21,000 ہے۔

مزید معلومات یہاں دیکھیں:

کریڈٹ اور قرضے

ایک نئی کرونا وائرس SME گارنٹی سکیم کا مطلب یہ ہے کہ شاید آپ اس سکیم میں شریک قرض دینے والے اداروں سے اضافی قرضے حاصل کر سکیں تاکہ آپ کو آنے والے مہینوں میں سہارا مل سکے۔

حکومت SME قرض دینے والوں کو نئے غیر محفوظ شدہ (بلا ضمانت) قرضوں کے لیے 50 فیصد تک کی ضمانت دے گی تاکہ انہیں ورکنگ کیپیٹل (روزمرہ کاروبار کے لیے دستیاب سرمایہ) کے طور پر استعمال کیا جائے۔

حکومت موجودہ چھوٹے کاروباروں والے صارفین کو قرض دینے والے اداروں کے لیے ذمہ دارانہ طور پر قرض دینے کے فرائض سے استثناء بھی فراہم کر رہی ہے۔

یہ استثناء چھ مہینوں کے لیے ہے اور یہ کاروباری مقاصد سے کسی بھی کریڈٹ کے لیے واجب ہو گا جس میں نیا کریڈٹ، کریڈٹ کی حد میں اضافے اور کریڈٹ کے مختلف طریقے اور نئے سٹرکچر بھی شامل ہیں۔

ریجنوں اور سیکٹروں کو سہارا دینا

حکومت نے کرونا وائرس کی وبا سے زیادہ متاثر ہونے والی کمیونٹیوں، ریجنوں اور شعبوں کے لیے 1 بلین ڈالر کی رقم مختص کی ہے۔ یہ رقم وبا کے  دوران مدد اور بحالی کے لیے مدد کی خاطر دستیاب رہے گی۔ اس کے ساتھ ساتھ حکومت ہمارے ہوائی سفر کے شعبے کو بھی 715 ملین ڈالر تک کے پیکیج کے ذریعے مدد دے رہی ہے۔

جاب میکر پلان، کاروباروں کی مدد کے لیے عارضی اقدامات

2020-21 کے بجٹ کے تحت حکومت کئی اقدامات پر عمل کر رہی ہے جن سے کاروباروں کو کرونا وائرس (COVID-19) وبا کے اثرات سے بحال ہونے میں مدد ملے گی۔

ان اقدامات کا تعلق ٹیکس میں رعایتوں، منہا کی جا سکنے والی رقوم اور ٹیکس ریٹرن بھرتے ہوئے اثاثوں کی قیمت گرنے کے کلیمز سے ہے۔ یہ اقدامات 2020-21 اور 2021-22 کے مالی سالوں میں کرونا وائرس COVID-19 سے مالی طور پر متاثر ہونے والے کاروباروں کو مدد دیں گے۔

ان اقدامات میں یہ شامل ہیں:

  • جاب میکر ہائرنگ کریڈٹ
  • نئے اثاثوں یا اثاثوں کو بہتر بنانے کے مکمل اخراجات طلب کرنے کی عارضی سہولت (Temporary full expensing)
  • حالیہ سال میں پچھلا نقصان منہا کرنا (Loss carry back)
  • کاروباری سرمایہ کاری کے لیے سہارا – اثاثوں کی قدر میں تیزی سے کمی کی بنیاد پر رقوم منہا کرنا (accelerated depreciation deductions)
  • اثاثوں کی قیمت کو فوری طور پر کاٹنا (instant asset write-off)
  • چھوٹے کاروباروں کے ٹرن اوور کی کم از کم حد بڑھانا