نسل پرستی قابل قبول نہیں ہے

اگر آپ نے نسلی امتیاز، ستائے جانے یا نفرت کو دیکھا ہے یا آپ کو اس کا تجربہ ہوا ہے تو اسے خاموشی سے برداشت نہ کریں؛ اس کے خلاف آواز اٹھائیں۔

اگر آپ نسل پرستانہ رویّے کا شکار ہوئے ہیں

  • اگر آپ پر حملہ کیا گیا ہے یا آپ کو تشدّد کی دھمکی ملی ہے تو پولیس سے رابطہ کریں۔ 
  • ہنگامی صورتحال یا زندگی کو خطرہ پیش ہونے پر ٹرپل زیرو (000) پر فون کریں اور پولیس کے لیے پوچھیں۔
  • اگر آپ کو پولیس کی مدد درکار ہو لیکن فوری خطرہ پیش نہ ہو تو پولیس اسسٹنس لائن (444 131) کو فون کریں۔
  • اگر تشدّد والی صورتحال نہ ہو، اور اگر ایسا کرنا محفوظ ہو تو، شاید آپ خود اس صورتحال سے نبٹنا چاہیں اور متعلقہ شخص یا متعلقہ لوگوں سے خود بات کرنا چاہیں۔
  • اگر خود بات کرنے سے صورتحال حل نہ ہو یا اگر آپ کو خود بات کرنا ٹھیک نہ لگے تو آپ آسٹریلیا میں انسانی حقوق کے کمیشن (آسٹریلین ہیومن رائٹس کمیشن، AHRC) کے پاس شکایت کر سکتے ہیں۔ 
  • AHRC کے پاس شکایت کرنے کے لیے www.humanrights.gov.au/complaints پر جائیں یا AHRC کی نیشنل انفارمیشن سروس کو 419 656 1300 یا 9888 9284 02 پر کال کریں۔

دیکھنے والوں کی طاقت

جب نسل پرستانہ رویّہ دیکھنے والے لوگ اس کے خلاف آواز اٹھائیں تو نشانہ بننے والے شخص کو سہارے کا احساس ہوتا ہے اور ممکن ہے اس وجہ سے نسل پرستانہ رویّہ دکھانے والے شخص کو اپنے رویّے پر غور کرنا پڑے۔ خود کو خطرے میں نہ ڈالیں۔ لیکن اگر ایسا کرنا محفوظ ہو تو آواز اٹھائیں اور نشانہ بننے والے شخص کے ساتھ کھڑے ہوں۔ محض ایک چھوٹے سے اظہار میں بھی طاقت ہو سکتی ہے۔

اگر آپ نسل پرستانہ رویّہ دیکھیں تو آپ یہ کر سکتے ہیں:

  • آواز اٹھائیں – صاف کہیں کہ یہ نسل پرستانہ رویّہ ہے، ذمہ دار شخص کو بتائیں کہ یہ قابل قبول نہیں ہے
  • نشانہ بننے والے شخص کو سہارا دیں – جس شخص کو نشانہ بنایا جا رہا ہو، اس کے برابر کھڑے ہو جائیں اور اس سے پوچھیں کہ کیا وہ ٹھیک ہے
  • ثبوت اکٹھے کریں – اپنے فون پر واقعے کی ریکارڈنگ کر لیں، ذمہ دار شخص کی فوٹو کھینچ لیں اور حکام کو واقعے سے مطلّع کریں

آسٹریلین ہیومن رائٹس کمیشن دیکھنے والوں کو کچھ مشورے دیتا ہے۔ یہاں دیکھیں: https://itstopswithme.humanrights.gov.au/respond-racism

نسلی امتیاز اور آپ کے حقوق

آسٹریلیا میں یہ قانون کے خلاف ہے کہ نسل، رنگ، قومی یا نسلی ماخذ کی بنیاد پر کسی فرد یا لوگوں کے گروہ کے سلسلے میں کھلے عام کچھ ایسا کیا جائے جس سے ناگواری، توہین، تذلیل یا خوف پیدا ہونے کا امکان ہو۔ اس قسم کے رویّے کو نسلی بنیادوں پر نفرت شمار کیا جاتا ہے۔

نسلی بنیادوں پر نفرت کی مثالوں میں یہ شامل ہو سکتا ہے:

  • انٹرنیٹ پر نسل کے حوالے سے ناگوار مواد جس میں ای فورم، بلاگ، سوشل نیٹ ورکنگ سائیٹس اور وڈیو شیئرنگ سائیٹس شامل ہیں
  • اخبار، میگزین یا دوسری مطبوعات جیسے کسی پرچے یا فلائر میں نسلی حوالے سے ناگوار تبصرے یا تصویریں
  • عوامی جلسے میں نسل کے حوالے سے ناگوار تقریریں
  • کسی عوامی مقام جیسے دکان، جائے کار، پارک یا پبلک ٹرانسپورٹ یا سکول میں نسل کے حوالے سے بدزبانی والے تبصرے
  • کھیلوں کے مواقع پر کھلاڑیوں، تماشائیوں، کوچ یا اہلکاروں کی طرف سے نسل کے حوالے سے بدزبانی والے تبصرے۔

قانون کا مقصد کھل کر بات کر سکنے کے حق ('آزادئ اظہار') اور نسلی بنیادوں پر نفرت کے بغیر زںدگی گزارنے کے حق کے درمیان توازن رکھنا ہے۔بعض صورتوں میں ممکن ہے کہ اگر کچھ حرکتیں "معقول طور پر اور اچھے ارادے سے" کی جائے تو یہ قانون کے خلاف نہ ہو۔

نسلی امتیاز تب واقع ہوتا ہے جب ایک شخص کے ساتھ اس کی نسل، رنگ، نسب، قومی یا نسلی ماخذ یا تارک وطن حیثیت کی وجہ سے ایک ہی صورتحال میں کسی اور شخص کے مقابلے میں کم فائدے کا برتاؤ کیا جائے جیسے ایک شخص کو اس کے مخصوص نسلی پس منظر یا رنگت کی وجہ سے مکان کرایے پر دینے سے انکار کر دیا جائے۔

نسلی امتیاز تب بھی واقع ہوتا ہے جب ایسا کوئی اصول یا پالیسی موجود ہو جو سب لوگوں کے لیے برابر ہو لیکن جو کوئی مخصوص نسل، رنگ، نسب، قومی یا نسلی ماخذ یا تارکن وطن حیثیت رکھنے والے لوگوں کو غیرمنصفانہ طور پر متاثر کرتی ہو جیسے کوئی کمپنی کہتی ہو کہ ان کے ملازمین کو کام پر ٹوپیاں یا سر ڈھکنے والے دوسرے کپڑے پہننے کی اجازت نہیں ہے کیونکہ اس میں کچھ نسلی پس منظروں کے لوگوں پر غیر منصفانہ اثر پڑنے کا امکان ہے۔

اگر آپ کو نسلی امتیاز یا نسلی بنیادوں پر نفرت کا تجربہ ہو تو آپ آسٹریلین ہیومن رائٹس کمیشن کے پاس شکایت کر سکتے ہیں۔ شکایت کا عمل آسان، مفت اور لچکدار ہے۔

آسٹریلین ہیومن رائٹس کمیشن کے پاس شکایت کرنے کے لیے یہاں جائیںwww.humanrights.gov.au/complaints

قومی انفارمیشن سروس

آسٹریلیائی ہیومن رائٹس کمیشن کی نیشنل انفارمیشن سروس (این آئی ایس) افراد ، تنظیموں اور آجروں کو انسانی حقوق اور امتیازی سلوک کے مختلف امور کے بارے میں معلومات اور حوالہ جات فراہم کرتی ہے۔ یہ خدمت مفت اور خفیہ ہے۔

این آئی ایس کر سکتے ہیں:

  • وفاقی انسانی حقوق اور امتیازی سلوک کے قانون کے تحت آپ کو اپنے حقوق اور ذمہ داریوں کے بارے میں معلومات دیں
  • اس پر تبادلہ خیال کریں کہ کیا آپ کمیشن کو شکایت کرنے کے قابل ہوسکتے ہیں یا آپ کی صورتحال پر قانون کیسے لاگو ہوتا ہے
  • آپ کو شکایت کے بارے میں معلومات دیں ، شکایت کا جواب دیں یا امتیازی سلوک کے مخصوص معاملات سے نمٹیں
  • آپ کو کسی اور تنظیم سے رجوع کریں جو آپ کی مدد کرنے میں کامیاب ہوسکتی ہے

براہ کرم نوٹ کریں کہ این آئی ایس قانونی مشورے فراہم کرنے سے قاصر ہے۔

NIS سے آپ رابطہ کرسکتے ہیں۔

ترجمہ اور ترجمانی خدمت

ترجمہ اور ترجمانی خدمت (TIS National) ان لوگوں کے لئے ایک ترجمانی خدمت ہے جو انگریزی نہیں بولتے ہیں۔ TIS قومی خدمات کی اکثریت غیر انگریزی بولنے والوں کے لئے مفت ہے۔

مشاورت اور دماغی صحت کی فلاح و بہبود

ایک نئی 24/7 سپورٹ سروس خاص طور پر COVID-19 وبائی مرض کے ذریعے لوگوں کی مدد کے لئے ڈیزائن کی گئی ہے جو تمام آسٹریلیائی باشندوں کو بلا معاوضہ دستیاب ہے۔

سپورٹ سروس کو ویب سائٹ https://coronavirus.beyondblue.org.au/ کے ذریعے حاصل کیا جاسکتا ہے

ذاتی بحران اور دماغی صحت سے متعلق امدادی خدمات کے ل you آپ کسی بھی وقت 348 512 1800 پر بلینڈ سے باہر یا 14 11 13 پر لائف لائن سے رابطہ کرسکتے ہیں۔

کڈز ہیلپ لائن 5 سے 25 سال کی عمر کے نوجوانوں کے لئے ایک مفت خدمت ہے۔ بچے ، نوعمروں اور نو عمر افراد کسی بھی وقت 800 551 1800 پر کال کرسکتے ہیں۔